اساتذہ کی حاضری اور معیارِ تعلیم میں تعلق

Qammar Shahzad

میں ایبٹ آباد کا رہائشی ہوں اور صوبہ خیبر پختونخواہ میں آنے والی تعلیمی بہتری کی اصلیت بیان کرنا چاہتا ہوں۔ اگرچہ کچھ بہتری آئی ضرور ہے لیکن کیا صرف اساتذہ کو بائیومیٹرک نظام کے تحت سکول میں وقت پر حاضری کا پابند بنانے سے سکولوں کے تمام مسائل حل ہو جائیں گے ؟ اس بات کو یقینی کون بنائےگا کہ اساتذہ سکولوں گزارے گئے وقت کو صرف تدریس کیلئے استعمال کریں نہ کہ آپس کی گپ شپ میں ضائع کریں۔ اس کے علاوہ ایسے اساتذہ بھی ہیں جو وقت پر حاضری تو لگا دیتے ہیں لیکن اس کے بعد سکول سے نکل کر اپنے کام کاج کرتے رہتے ہیں ۔ صرف حاضری کو یقنینی بنانے سے معیارِ تعلیم اور معیارِ تدریس میں بہتری کیسے آئے گی ؟

Ubaid Ullah Tahir
سکول اپ گریڈیشن رہنے دیں،سڑک لے لیں
سکولوں کی اپ گریڈیشن بہت مشکل ہے آپ کوئی اور سکیم مانگ لیں

اس کے ساتھ ساتھ میں اس پلیٹ فارم کے توسط سے ایک اور اہم مسئلے کی طرف توجہ بھی دلانا چاہوں گا اور وہ ہے انسپیکشن ٹیم کا سکولوں کا دورہ جس میں بچوں کی چھٹی کر دی جاتی ہے تاکہ وہ ٹیم کے سامنے اپنے مسائل بیان نہ کرسکیں اور کاغذی کاروائی کرکے ٹیم کو کھانا کھلا کر الوداع کر دیا جاتا ہے۔ اس صورتحال میں کیسے کہا جاسکتا ہے کہ تعلیمی شعبے میں بہتری آئی ہے ؟ کیا صرف اساتذہ کی 100 فیصد حاضری بہتری ہے یا انسپیکشن ٹیموں کی فائلوں میں لگی ہوئی سب اچھا کی رپورٹیں بہتری ہے ؟ تعلیمی شعبہ دراصل ابتری کا شکار  ہورہا ہے اور ہم خوش ہیں کہ بہتری آ رہی ہے ۔ اساتذہ کو ان کی ذمہ داریوں اور فرائض سے آگاہ کرنا بھی ضروری ہے۔ اساتذہ کی تربیت کے دوران ان میں احساسِ ذمہ داری پیدا کیا جائے کیونکہ ان کے کندھوں پر معاشرے کی تعمیر کی بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔ دنیا میں جس ملک نے بھی ترقی کی ہے تعلیم کی بدولت کی ہے اس لئے ہمیں اپنے تعلیم کے شعبے کو سنجیدگی سے لینا ہوگا۔

Rana Awais (PP-193) commits to Focus on Missing Facilities

Mian Irfan (PP-231) Commits to Provide Missing Facilities

Elsewhere on Taleem Do

Fariya Hashmat

Education can spur economic development

Countries can be highly developed even without natural resources

Shanza Khalid

Ali Muhammad Khan (NA-22) Commits to Focus on Teachers

Ali Jan Maqsood

Ghost schools of Balochistan

The village has only one high school with three teachers

Peter Frankopan

The wondrous world of learning; disagreeing with Aristotle

Renowned historian insists that school can be fun

آج ہی تعلیم دو ایپ ڈاؤن لوڈ کریں اور پاکستان میں تعلیمی اصلاحات کے لیے اپنی آواز بلند کریں